پاکستان میں آج گندم کا ریٹ

Wheat rate in Pakistan

تعارف:

گندم، جسے پاکستان میں گندم کے نام سے جانا جاتا ہے، ملک کی غذائی تحفظ اور معاشی استحکام میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔  مئی 2024 تک، آج پاکستان میں گندم کی قیمت روپے کے درمیان اتار چڑھاؤ ہے۔ 4000 سے روپے 4600 گندم کی قیمت فی 40 کلو گرام۔ یہ مضمون پاکستان میں گندم کی قیمتوں کے ایک جامع تجزیہ پر روشنی ڈالتا ہے، عوامل، تاریخی رجحانات، اور کسانوں، صارفین اور پالیسی سازوں کو درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے ممکنہ حل تلاش کرتا ہے۔

پاکستان میں گندم کی اہمیت:

پاکستان، ایک زرعی معاشرہ ہونے کے ناطے، اس کی تقریباً 60 فیصد آبادی اپنی روزی روٹی کے لیے براہ راست یا بالواسطہ طور پر زراعت پر منحصر ہے۔ گندم، جو کہ اکثریت کے لیے ایک اہم غذا ہے، کل کاشت شدہ رقبہ میں تقریباً 13 فیصد اور جی ڈی پی میں 3 فیصد حصہ ڈالتی ہے۔ 25 ملین ٹن کی اوسط سالانہ پیداوار کے ساتھ عالمی سطح پر گندم پیدا کرنے والا آٹھواں بڑا ملک ہونے کے باوجود، زیادہ مانگ اور کم پیداواری صلاحیت کی وجہ سے پاکستان اب بھی خالص درآمد کنندہ ہے۔

پاکستان میں گندم کی قیمت کے تاریخی رجحانات:

گندم کی قیمتیں کئی سالوں سے اتار چڑھاؤ کا شکار رہی ہیں۔ پاکستان بیورو آف سٹیٹسٹکس کے مطابق، پاکستان میں گندم کی فی 40 کلو تھیلے کی اوسط تھوک قیمت میں اتار چڑھاؤ دیکھا گیا ہے، 2015 میں 1350 روپے سے 2018 میں 1850 روپے تک، اور 2021 میں یہ 1400 روپے تک کم ہو گئی۔ تاہم، یہ اعداد و شمار نہیں ہو سکتے۔ محل وقوع، معیار اور موسمی تغیرات پر غور کرتے ہوئے کسانوں اور صارفین کو درپیش اصل قیمتوں کی عکاسی کریں۔

پاکستان میں آج گندم کا ریٹ

پنجاب پاکستان میں گندم کی شرح:

ضلع/شہرکم از کم ریٹزیادہ سے زیادہ شرح
عارف والا4,580 PKR4,670 پاکستانی روپے
علی پور4,500 PKR4,600 PKR
احمد پور شرقیہ4,550 PKR4,640 پاکستانی روپے
بہاولنگر4,630 پاکستانی روپے4,680 PKR
بہاولپور4,600 PKR4,690 PKR
بھکر4,500 PKR4,610 پاکستانی روپے
بورے والا4,640 پاکستانی روپے4,680 PKR
چیچہ وطنی۔4,650 PKR4,690 PKR
چشتیاں4,600 PKR4,650 PKR
چوک اعظم4,500 PKR4,530 PKR
چکوال4,450 PKR4,500 PKR
چوک منڈا4,520 PKR4,600 PKR
ڈیرہ غازی خان4,560 PKR4,620 پاکستانی روپے
ڈیرہ اسماعیل خان4,500 PKR4,610 پاکستانی روپے
ڈنگہ بنگا4,550 PKR4,620 پاکستانی روپے
فیصل آباد4,550 PKR4,600 PKR
فقیروالی4,620 پاکستانی روپے4,680 PKR
فاضل پور4,520 PKR4,600 PKR
فورٹباس4,550 PKR4,660 PKR
گوجرانوالہ4,480 PKR4,560 PKR
ہارون آباد4,520 PKR4,590 PKR
حاصل پور4,620 پاکستانی روپے4,670 پاکستانی روپے
اسلام آباد4,830 PKR4,850 PKR
کہروڑ پکا4,450 PKR4,600 PKR
خانپور4,660 PKR4,750 PKR
خانیوال4,530 PKR4,560 PKR
لیہ4,530 PKR4,670 پاکستانی روپے
لاہور4,620 پاکستانی روپے4,670 پاکستانی روپے
لودھراں4,500 PKR4,560 PKR
ملتان4,600 PKR4,620 پاکستانی روپے
میانوالی4,500 PKR4,550 PKR
میاں چنوں4,540 PKR4,620 پاکستانی روپے
منچن آباد4,560 PKR4,600 PKR
مظفر گڑھ4,480 PKR4,600 PKR
اوکاڑہ4,430 پاکستانی روپے4,610 پاکستانی روپے
پتوکی4,500 PKR4,600 PKR
پاکپتن شریف4,500 PKR4,530 PKR
رحیم یار خان4,550 PKR4,720 پاکستانی روپے
راجن پور4,500 PKR4,650 PKR
راولپنڈی4,670 پاکستانی روپے4,700 PKR
صادق آباد4,600 PKR4,650 PKR
ساہیوال4,550 PKR4,590 PKR
سرگودھا4,500 PKR4,620 پاکستانی روپے
شیخوپورہ4,500 PKR4,580 PKR
ٹوبہ ٹیک سنگھ4,630 پاکستانی روپے4,690 PKR
وہاڑی۔4,500 PKR4,600 PKR
یزمان منڈی4,520 PKR4,610 پاکستانی روپے

سندھ پاکستان میں گندم کی شرح:

ضلع/شہرکم از کم ریٹزیادہ سے زیادہ شرح
دادو4,550 PKR4,650 PKR
حیدرآباد4,700 PKR4,750 PKR
گھوٹکی ۔4,570 PKR4,640 پاکستانی روپے
جھڈو4,740 پاکستانی روپے4,800 PKR
کراچی4,760 PKR4,780 PKR
کنری4,500 PKR4,670 پاکستانی روپے
لاڑکانہ4,650 PKR4,700 PKR
محراب پور4,550 PKR4,650 PKR
میرپور خاص4,650 PKR4,720 پاکستانی روپے
نواب شاہ4,640 پاکستانی روپے4,660 PKR
سکرنڈ4,320 پاکستانی روپے4,350 PKR
سانگھڑ4,700 PKR4,720 پاکستانی روپے
شکارپور4,500 PKR4,650 PKR
شہداد پور4,650 PKR4,800 PKR
سکھر4,600 PKR4,650 PKR
ٹنڈو اللہ یار4,630 پاکستانی روپے4,670 پاکستانی روپے
ٹنڈو محمد خان4,500 PKR4,580 PKR
عمرکوٹ4,600 PKR4,630 پاکستانی روپے

کے پی کے میں گندم کی قیمت:

 

شہرکم از کم قیمتزیادہ سے زیادہ قیمت
مردانPKR 4,700PKR 4,620
ڈیرہ اسماعیل خانPKR 4,320PKR 4,900
پشاورPKR 4,750PKR 4,850

بلوچستان میں گندم کا ریٹ

شہرکم از کم قیمتزیادہ سے زیادہ قیمت
کوئٹہPKR 4,650PKR 4,700
سبیPKR 4,600PKR 4,700

پاکستان میں گندم کے نرخ میں اتار چڑھاؤ کی وجوہات:

  1. گھریلو پیداوار: موسمی حالات کا خطرہ۔
  2. عالمی طلب اور رسد: درآمدات پر انحصار۔
  3. حکومتی پالیسیاں: سبسڈی، خریداری، اور امدادی قیمتوں کا اثر۔
  4. موسمیاتی تبدیلی: شدید موسمی واقعات کا اثر۔
  5. جدت طرازی کا فقدان: فرسودہ کاشتکاری کے طریقوں کی وجہ سے جمود کا شکار پیداوری۔

پاکستان میں گندم کی شرح میں اتار چڑھاؤ کے اثرات:

  1. کسان: آمدنی اور معاش پر براہ راست اثر۔
  2. صارفین: بدلے ہوئے کھانے کے اخراجات اور غذائیت کے نمونے۔
  3. تاجر: منافع کا مارجن اور مارکیٹ میں اتار چڑھاؤ۔
  4. پالیسی ساز: سیاسی اور اقتصادی ایجنڈے کے اثرات۔

پاکستان میں گندم کی شرح میں اتار چڑھاؤ کے حل:

  1. پیداوار میں اضافہ: کاشتکاری کے جدید طریقوں کو اپنانا۔
  2. ٹیکنالوجی اپنانا: جدید زرعی ٹیکنالوجیز کا نفاذ۔
  3. تجارتی پالیسی: لچکدار اور متوازن تجارتی پالیسیاں۔
  4. فوڈ سیکیورٹی: بفر اسٹاک کی دیکھ بھال اور ٹارگٹڈ سبسڈیز۔

نتیجہ :

پاکستان میں گندم کی قیمت ملکی اور عالمی عوامل کے پیچیدہ تعامل کی عکاسی کرتی ہے۔ جب کہ چیلنجز برقرار ہیں، مجموعی نقطہ نظر کو اپنانا، بشمول پیداوار میں اضافہ، تکنیکی جدت، متوازن تجارتی پالیسیاں، اور فوڈ سیکیورٹی پر توجہ، پاکستان میں گندم کے مزید مستحکم شعبے کی راہ ہموار کر سکتی ہے۔ ان چیلنجوں سے اجتماعی طور پر نمٹنا ملک کے مستقبل کے لیے گندم کی ایک پائیدار اور لچکدار صنعت کو یقینی بنانے میں مددگار ثابت ہوگا۔

Join The Discussion

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Compare listings

Compare